شرعی مسا ئل کا حل


نشہ کے متعلق سوالات
نشہ
شراب کی حرمت اور نماز کی فرضیت سے انکار باعث کفر ہے ایسے افراد پر نماز جنازہ پڑھنا جائز نہیں ہے۔ تاہم اگر یہ وجوب و فرضیت کا منکر نہ ہو تو ایسے بے نمازی اور شرابی گنہگار ضرور ہیںلیکن نماز جنازہ نہ پڑھانے کا کوئی حکم نہیں ‘ خودکشی کرنے والا پر بھی جنازہ کی حرمت ثابت نہیں۔
شراب کی خرید فروخت کسی طور پر جائز نہیں ہے سوائے علاج کے لئے، خرید کے بہا دینے اور سرکہ بنانے کے لئے حتیٰ کہ شراب رکھنے کے لئے دکان کرائے پہ دینا بھی جائز نہیں ہے۔
رسول ﷺ کا فرمان ہے ۔ کل مسکر حرام ۔ ہر نشہ آور چیز حرام ہےاور جس چیز کی کثرت نشہ آور ہو اسکی قلیل مقدار بھی حرام ہے۔ چرس نشہ آور ہونے میں کوئی دورائے نہیں ہے لہٰذا حرام ہے۔
اپنے تبصرے/ سوالات بھیجنے کے لیے نیچے دیا گیا فارم استعمال کریں۔
شکایات بھیجنے کے لیے یہاں کلک کریں