صوفیہ امامیہ نوربخشیہ

  سونے پر زکوٰۃ


  سونے پر زکوٰۃ کا نصاب

اَمَّا الذَّھَبُ فَنِصَابُہُ اَنْ یَّبْلُغَ عِشْرِیْنَ دِیْنَارًا فَاِذَا بَلَغَ اِلٰی ھٰذَا الْقَدْرِ وَحَالَ عَلَیْہِ الْحَوْلُ وَجَبَ فِیْہِ رُبْعُ الْعُشْرِ وَ ھُوَ نِصْفُ دِیْنَارٍ وَ فِیْمَا زَادَ عَلَیْہِ بَعْدَ النِّصَابِ فَفِیْ کُلِّ اَرْبَعَۃِ دَنَانِیْرَ یَجِبُ قِیْرَطَانِ اَعْنِیْ رُبْعُ الْعُشْرِ وَلَا یَجِبُ شَیْئیٌ فِیْمَا نَقَصَ عَنْ اَرْبَعَۃٍ ۔
سونے کانصاب یہ ہے کہ یہ بیس دیناروںکو پہنچ جائے جب اس مقدار کوپہنچ جائے اور اسی پر سال گزرجائے تو ربع عشر زکوٰۃ واجب ہے اور یہ نصف دینار ہے اور جب مقدا ر اس نصاب سے زائدہو جائے توہر چار دینار پردو قیراط یعنی چالیسواں حصہ واجب ہے(۲؎ )اور مقدار جب تک چار دینار سے کم ہوتو اس وقت تک کوئی زکوٰۃواجب نہیں۔